زمانہ جاہلیت کی یاد تازہ ہو گئی، سفاک شوہر نے حاملہ بیوی کو بیٹی پیدا کرنے سے روکنے کے لیے پھانسی پر لٹکا دیا

Article

زمانہ جاہلیت کی یاد تازہ ہو گئی، سفاک شوہر نے حاملہ بیوی کو بیٹی پیدا کرنے سے روکنے کے لیے پھانسی پر لٹکا دیا

134 views

Disclaimer*: The articles shared under 'Your Voice' section are sent to us by contributors and we neither confirm nor deny the authenticity of any facts stated below. Parhlo PInk will not be liable for any false, inaccurate, inappropriate or incomplete information presented on the website. Read our disclaimer.

زمانہ جاہلیت کا یہ رواج تھا کہ بیٹیوں کی پیدائش کو اپنے لیۓ منحوسیت کی علامت سمجھا جاتا تھا اس وجہ سے ان معصوم بچیوں کو زندہ درگور کر دیا جاتا تھا مگر اسلام کے بعد جہاں عورتوں کو پیروں سے اٹھا کر عزت کے درجے پر بٹھا کر شوہر کو اس بات کا پابند کر دیا گیا کہ وہ اپنی بیوی کو اس کے تمام حقوق دے وہیں اس بات کا بھی حکم دیا گیا کہ بیٹیوں کو زندہ دفن نہ کیا جاۓ

مگر بدقسمتی سے اب بھی کچھ ایسے لوگ موجود ہیں جن کے اندر جاہلیت کی خوبو اب بھی موجود ہے ایسے ہی ایک شوہر شہزاد بھی تھا جو کہ لاہور کا رہنے والا ہے تین سال قبل اس کی شادی نمرہ کے ساتھ ہوئی تھی جس کے  نتیجے میں ان کا دو سال کا ایک کمسن بیٹا بھی ہے اور اس کے بعد نمرہ ایک بار پھر ماں بننے والی تھی

تفصیلات کے مطابق آٹھ ماہ کی حاملہ نمرہ کی لاش اس کے گھر سے اس حالت میں ملی کہ وہ چھت سے پھندہ لگا کر لٹک رہی تھی ابتدائی تفتیش میں اس کے شوہر کا یہ کہنا تھا کہ نمرہ نے چھت سے پھندہ لگا کر خودکشی کر لی ہے مگر جب نمرہ کے گھر والوں نے حقائق بتاۓ تو پولیس نے اس کے شوہر کو بھی شامل تفتیش کر لیا

لاہور :محبت سے قتل تک ،درندہ صفت شوہر نے زمانہ جاہلیت کی یادتازہ کروا دی، شوہر نے کس بات سے انکار پر بیوی کو ہی پھندا لگا کر قتل کر دیا؟

Posted by ‎جیواور جینے دو‎ on Sunday, February 10, 2019

جس کے بعد یہ روح فرسا انکشاف ہوا کہ مقتولہ نمرہ کی موت خودکشی نہ تھی بلکہ اس کے شوہر شہزاد نے الٹراساونڈ کے بعد جب یہ پتہ چلا کہ مقتولہ کے پیٹ میں پیدا ہونے والی بچی ہے تو اس کے شوہر نے اس سے اس بچی کو ضائع کروانے کا تقاضا کیا جس سے انکار پر اس کے شوہر نے بیوی اور بچی دونوں کو ہلاک کر ڈالا

دوہرے قتل کی اس واردات نے جاہلیت کے دور کی یاد تازہ کر دی ہے جب کہ معصوم بچیوں کو پیدا ہوتے ہی زندہ درگور کر دیا جاتا تھا میاں فیصل شہزاد کے حوالے سے یہ بتایا جاتا ہے کہ وہ پیشے کے اعتبار سے ایک وکیل تھا اور قتل کے وقت شراب کے نشے میں دھت تھا پولیس نے متوفیہ نمرہ کے شوہر فیصل شہزاد کو گرفتار کر کے فیصل ٹاؤن لاہور کے تھانے میں اس کے خلاف مقدمہ درج کر لیا ہے

Please enter an Access Token on the Instagram Feed plugin Settings page.


Snap Chat Tap to follow